The Punjab Bar Council demanded the removal of Justice Qazi Fiaz Isa

جج جسٹس قاضی فائز عیسی کی برطرفی کا مطالبہ

(لاہور(نیوزاینڈ ویوز

پنجاب بار کونسل کی ایگزیکٹو کمیٹی کا اجلاس ہوا، جس میں مطالبہ کیا گیا ہے کہ ریاست کے تمام اداروں کو آئینی حدود میں رہتے ہوئے کام کرنا چاہیے اور افواج کو بھی دائر ے میں رہ کر کام کرنا چاہیے ۔

پنجاب بار کونسل کا کہنا ہے کہ یہ پابندی عدلیہ پر بھی اسی طرح عائد ہوتی ہے عدلیہ کو افواج پاکستان کے خلات قانون کے بغیر ریماکس نہیں دینے چاہیے پنجاب بار کونسل کا کہنا ہے کہ سپریم جوڈیشل کونسل کا جسٹس شوکت صدیقی کو عہدے ہٹانے کی سفارش کرنا قانون کے مطابق تھا

اس حوالے کراچی بار نے سابق جسٹس شوکت صدیقی کے فیصلے کو چیلنج کیا ہے جبکہ پنجاب کونسل نے اس کی حمایت نہیں کی ہے. پنجاب بار کونسل کا کہنا ہے کہ سپریم کورٹ کے جسٹس قاضی فائز عیسی نے فیض آباد دھرنہ کیس کے تحریری فیصلے میں قانون کے اصول کو نظر انداز کیا ہے حکومت اس فیصلے کو چیلنج کر سکتی ہے فیض آباد دھرنے میں بغیر کسی شہادت اور ثبوتوں کے افواج پاکستان کے خلاف سنجیدہ نوعیت الزامات لگائے ہیں جس سے را، بھارت اور دیگر دشمنوں کے موقف کی تعائد ہوئی ہے۔

پنجاب بار کونسل نے مطالبہ کیا ہے کہ جسٹس قاضی فائز عیسی کے خلاف آرٹیکل 209 کے تحت کارروائی کا حکم دیا جائے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں