PMLn PPP and Jui Religious war

پاکستان میں کرپٹ سیاستدانوں کا مذہبی منافرت پھیلاکر اپنی کرپشن چھپانے کا پلان

لاہور :کرپشن بچانے کے لیے بڑے بڑوں کا اسرائیلی شوشہ بے نقاب ، معیشت اور اسٹاک ایکسچینج کے بعد اب اسرائیل کے وزیراعطم کا دورے پاکستان سوشہ چھوڑ کر اپوزیشن کا حکومت مخالف تحریک چلنے اور مذہبی رنگ دینے کے لیے سر گرم ہے.

دوسری جانبن سول ایوی ایشن اتھارٹی نے بھی یہ واضح کر دیا کے کوئی ایسا طیار پاکستان کی حدود میں نہ ہی لینڈ ہوا ہے اور نہ ہی اجازت کے لیے کوئی درخواست آئی ،

جس کی وجہ سے پاکستان کا سیاسی درجہ حرارت بڑھنے کا امکان، سابق صدر آصف زرداری نے لاہور میں ڈیرے ڈال لیے، 4 روز کیلئے قیام کریں گے، نواز شریف سے ملاقات بھی متوقع ہے ۔
وزیر اعلی پنجاب سردار عثمان بزدارکا بڑا فیصلہ،سینکڑوں ملازمین کے لیے خوشخبری
معیشت اسٹاک ایکسچینج اور مھنگائی کا ڈرامہ ناکام ہوتا دیکھ کر اپوزیشن کا نیا شوشہ شروع ہو گیا، ملک کی معیشت اور سٹاک ایکسچینج میں بہتری متوقع دیکھ کر اپوزیشن نے یہ پلان تیار کیا ہے ، جبکہ متوقع طور پر اپوزیشن مذہبی جذبات ابھار کر ملکی حالت خراب کرنا چاہتی ہے تاکہ ملک میں مارشل لاء نافذ ہو جائے اور این آر آو کا راستہ نکل آئے .

تفصیلات کے مطابق پاکستان پیپلز پارٹی کے شریک چئیرمین اور سابق صدر مملکت آصف علی زرداری نے لاہور میں ڈیرے ڈال لیے ہیں۔ آصف علی زرداری 4 روز کیلئے پنجاب کے دارالحکومت لاہور میں قیام کریں گے۔ آصف زرداری کے لاہور میں قیام کے باعث ملک کی سیاست کا درجہ حرارت بڑھنے کا امکان ہے۔ آصف زرداری لاہور میں قیام کے دوران کئی اہم سیاسی ملاقاتیں کریں گے۔ جبکہ حکومت کیخلاف مشترکہ اپوزیشن اتحاد بنانے کیلئے بھی کوششیں کی جائیں گی۔
آصف زرداری اور نواز شریف اپنی کرپشن بچانے کہ لیے سرگرم ،
دوسری جانب پاکستان مسلم لیگ ن کے قائد نوازشریف سے سربراہ جے یوآئی ف مولانا فضل الرحمن کا ٹیلیفونک رابطہ ہوا ہے۔ مولانا فضل الرحمن نے آصف زرداری سے ہونے والی ملاقات بارے نوازشریف کو آگاہ کیا۔نوازشریف نے فضل الرحمن کو اپوزیشن جماعتوں سے رابطے تیز کرنے کی ہدایت کی ہے۔مولانا فضل الرحمن نے نوازشریف کو مشورہ دیا کہ تمام جماعتیں متحد ہوکر حکومت کو ٹف ٹائم دیں۔
سابق صدر مملکت آصف علی زرداری نے لاہور میں ڈیرے ڈال لیے
نوازشریف نے کہا کہ پیپلزپارٹی سمیت اپوزیشن جماعتوں کے مکمل اتحاد بارے پارٹی میں مشاورتی عمل جاری ہے۔ مولانا فضل الرحمن کا مزید کہنا ہے کہ تمام اپوزیشن جماعتیں ایک پیج پر آنے کیلئے متحد ہیں۔اصولی طور پر اتحا د میں کوئی رکاوٹ نہیں ہے عملی طور پر اس کاآغاز ہونا چاہیے۔
جبکہ متوقع طور پر اپوزیشن مذہبی جذبات ابھار کر ملکی حالت خراب کرنا چاہتی ہے تاکہ ملک میں مارشل لاء نافذ ہو جائے اور این آر آو کا راستہ نکل آئے .

دوسری جانب وزیر اطلاعات فواد چودھری نے کشمیریوں کی جدوجہد پر پاکستان کی طرف سے خراج تحسین پیش کیا اور کہا کہ پاکستان کے لوگ کشمیریوں کے ساتھ کھڑے ہیں جبکہ احسن اقبال کے ٹوئٹ پر ردعمل دیتے ہوئے کہ کہ وزیراعظم عمران خان نواز شریف ہیں نہ کابینہ میں آپ جیسے جعلی ارسطو ہیں، ہم مودی سے خفیہ مذاکرات کریں گے نہ اسرائیل سے آپکو ملک کی اتنی فکر ہوتی تو آج ملک کے یہ حالات نہ ہوتے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں