PM-pakistan-Imran-khan Stay In Lahore

پاکستان میں ادارے مضبوط کرنا ہمارے لیے چیلنج ہے، وزیراعظم

ریاض: وزیراعظم عمران خان نے سرمایہ کاری کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہمیں فوری طور پر کرنٹ خسارے کے مسئلے کا سامنا ہے اور ہمیں برآمدات بڑھانی ہیں تاکہ زرمبادلہ بڑھا یاجا سکے جبکہ ہمیں اقتدار میں آئے 60 دن ہوئے ہیں۔

ضرور پڑھیں: انو ملک پر مزید 2گلوکاراؤں کا جنسی ہراسانی کی کوشش کا الزام
ان کا مزید کہنا تھا کہ منی لانڈرنگ ترقی پذیر ملکوں میں بڑا مسئلہ ہے اور ہم جو بھی اصلاحات کریں گے اس کا اثر آنے والے دنوں میں پڑے گا۔ کرپشن کسی بھی ملک کو غریب بناتی ہے اور کرپشن انسانی ترقی کے منصوبوں سے رقم کا رخ موڑ دیتی ہے اس کے علاوہ کرپشن ملکوں میں ادارے تباہ کرتی ہے۔

انہوں نے اپنے خطاب میں مزید کہا ہم قرضوں کیلیے آئی ایم ایف اور دوست ملکوں سے رابطے کر رہے ہیں۔ پاکستان میں ادارے مضبوط کرنا ہمارے لیے چیلنج ہے اور آنے والے تین سے 6 ماہ پاکستان کیلئے سخت ہیں۔

وزیراعظم عمران خان نے اپنے خطاب میں کہا پاکستان اسلام کے نام پر وجود میں آیا اور نیا پاکستان کا مقصد قائد کے افکار پر عمل پیرا ہونا ہے جبکہ مشکل حالات سے نمٹنے کے لیے اقدامات کر رہے ہیں۔

وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ سمندر پار پاکستانی پاکستان کی طاقت ہیں، جن کو ہمیں سرمایہ کاری کی طرف راغب کرنا ہے۔’نیا پاکستان ہاؤسنگ اسکیم’ کا تذکرہ کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ پاکستان میں ایک کروڑ گھروں کی کمی ہے اور اس منصوبے کے تحت ابتدائی طور پر 50 لاکھ گھر تعمیر کیے جائیں گے۔

پاک-چین اقتصادی راہداری (سی پیک) کو پاکستان کے لیے بہت اہم اقتصادی منصوبہ قرار دیتے ہوئے وزیراعظم نے کہا کہ سی پیک سے پاکستان کی اسٹریٹجک اہمیت میں اضافہ ہوا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں