PIA-Plane-Accident

پنجگور ایئر پورٹ : مٹی میں پھنسنے والے پی آئی اے طیارے کو رسیوں سے باندھ کر نکالا گیا

کراچی : سول ایوی ایشن اتھارٹی کی جانب سے سنگین غفلت کا ارتکاب کرتے ہوئے پنجگور ایئرپورٹ پر پھنسے پی آئی اے کے طیارے کو رسیوں سے باندھ کر رن وے پر لایا گیا۔

تفصیلات کے مطابق پنجگور ایئرپورٹ پر پی آئی اے کا طیارہ گزشتہ روز بریک فیل ہوجانے کی وجہ سے رن وے سے کچے میں اتر گیا تھا جس کی مرمت کیلئے موقع پر ریلیف آپریشن مشینری موجود ہی نہیں تھی۔

قومی ادارے کے باکمال لوگوں نے لاجواب کارکردگی کا مظاہرہ کیا اور اے ٹی آر طیارے کو رسیوں سے باندھ کر رن وے پر لایا گیا، جیسے کہ وہاں رسہ کشی کا مقابلہ ہورہا ہو۔
کراچی میں گیس، بجلی غائب ہے، شہری گٹر ملا پانی پی رہے ہیں: مصطفیٰ کمال
ٹگ ماسٹر کے بجائے طیارے کو ٹریکٹرکے ذریعہ جائے حادثہ سے ہٹایا گیا، اس کام کیلئے شاول اورٹریکٹر مقامی ٹھیکیدارسے حاصل کیے گئے تھے۔

واضح رہے کہ عالمی ایوی ایشن قوانین کی روسے کسی بھی حادثے کی صورت میں سول ایوی ایشن اتھارٹی معاونت کرتی ہے، ایئرپورٹ پرلازمی مشینری نہ ہونے کی وجہ سے طیارے کو چوبیس گھنٹوں بعد مٹی سے باہر نکالا گیا۔
بلوچستان شدید زلزلوں کی زد میں
اب رن وے پر ہی طیارے کی مرمت کی جائے گی جس کے بعد اسے کراچی روانہ کردیا جائے گا۔ ہفتے کو پیش آنے واقعے میں طیارے کے تمام مسافر محفوظ رہے تھے۔

اس حوالے سے سول ایوی ایشن اتھارٹی کے ذرائع کا کہنا ہے کہ کسی بھی حادثے کی صورت میں متعلقہ ایئرلائن خود مشینری کا بندوبست کرتی ہے، مشینری فراہم کرنا سی اے اے کی ذمہ داری نہیں ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں