paramedical protest against land mafia

آل پاکستان پیرا میڈیکل اسٹاف فیڈریشن لینڈ کامافیا کے خلاف احتجاج

آل پاکستان پیرا میڈیکل اسٹاف فیڈریشن نصیرآباد کے ضلعی صدر فضل محمد کھوسہ اور جنرل سیکریڑی مہراللہ موسیانی نے یہاں پریس کانفریس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ لینڈ مافیا نے 3 سال قبل ہسپتال کالونی ڈیرہ مراد جمالی ناجائز زمین پر قبضہ کرکے مکان تعمیر کیا اور بعدازاں اپنے قبضے کو مزید آگے بڑھانے کی غرض سے ایک مین گیٹ تعمیر کیا جس کے خلاف پیرا میڈیکل اسٹاف نے احتجاج کیا جس پر ہمارے خلاف عدالت میں جھوٹا کیس درج کرایا تاہم جناب سیشن جج نے اس کیس کو خارج کردیا

انہوں نے کہا کہ اس معاملے میں سابقہ ڈپٹی کمشز نصیرآباد کے حکم پر تحصیلدار اور ایس ایچ او کی موجودگی میں گیٹ کی دیوار کو بند کردیا گیا لینڈ مافیا نے ایک رکن نے ایڈیشنل سیشن جج کی عدالت میں درخواست دائر کی کہ مجھے وہاں گیٹ تعمیر کرنے کی اجازت دی جائے مگر معزز عدالت نے 30 مارچ 2018ء کو اس کی یہ اپیل بھی خارج کردی لیکن لینڈ مافیا نے عدالت کے حکم کی بھی خلاف ورزی کرتے ہوئے 2 اپریل 2018ء کو شام کے وقت پانچ مسلح افراد کے ہمراہ دیوار توڑ کر ہسپتال کالونی کی طرف دروازہ نسب کردیا ہے
عدلیہ مخالف تقاریر پر سپریم کورٹ بار کے سینئر نائب صدر قمر قریشی بھی سپریم کورٹ کی حمایت میں میدان میں آ گئے
جس پر ہم نے ایس ایچ او سٹی ڈیرہ مراد جمالی سے ایف آئی آر درج کرنے کے لئے رابطہ کیا تو اس نے معذوری ظاہر کردی اور ضلعی انتظامیہ بھی دلچسپی نہیں لے رہی ہے لینڈ مافیا کی وجہ سے ہسپتال کالونی کا پرامن ماحول خراب ہونے کا اندیشہ ہے انہوں نے کہا کہ اگر مذکورہ گیٹ فوری طور پر نہیں ہٹایا گیا تو ہم پانچ اپریل سے ضلع بھر میں او پی ڈی کا بائیکاٹ کریں گے اور 9 اپریل کو ہونے والی تین روزہ پولیو مہم کی بھی بائیکاٹ کریں گے سید ذوالفقار شاہ بخاری اور آغاز نیاز احمد گولہ بھی پریس کانفرنس میں موجود تھے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں