nawaz sharif Want support Of PPP

نا اہل وزیر اعظم اپنی سیاست بند گلی میں جاتا دیکھ کر ایک بار پھر پیپلز پارٹی سے دوستی کرنے کو تیار

سابق وزیراعظم کا کہنا ہے کہ آئینی بالادستی کیلئے وہ سب کے ساتھ بیٹھنے کو تیار ہیں۔۔۔ نواز شریف نے پیپلز پارٹی کے حالیہ روئیے کو مایوس کن قرار دے دیا۔

سابق وزیر اعظم نواز شریف کی ایک بار پھر پاناما فیصلے کیخلاف گھن گرج،، بولے،، عوام نے فیصلہ مانا نہ ہی مانیں گے، یہ سارا معاملہ ہی کالا لگتا ہے،، کارکردگی کے باوجود نام ای سی ایل میں ڈالنے کی سفارش کی جاتی ہے.

انہوں نے کہا کہ اقامہ کو بنیاد بنا کر وزارت عظمی اور پارٹی صدارت سے ہٹایا گیا، اب اسی فیصلے کو بنیاد بنا کر تاحیات نا اہل کرنے کا سوچا جارہا.
چودھری نثار نے نون لیگ کی منفی سیاست کے خلاف جنگ کا اعلان کر دیا
لیگی قائد کی سیاسی مخالفین پر بھی چوٹ،، کھری کھری سناتے ہوئے بولے، تبدیلی تو آگئی ہے پہلے کپتان مینار پاکستان میں جلسے کرتے تھے اب گلی محلوں میں کرتے ہیں،، بولے پیپلز پارٹی نے بھی مایوس کیا.
چوہدری نثار کے سیاسی مستقبل کا فیصلہ کون کرے گا
نواز شریف نے کہا ڈالر کی قیمت 2013 کے بعد کیا تھی اور اب کدھر گئی، سب کے سامنے ہے۔ بلوچستان اسمبلی میں تبدیلی پر قوم جاننا چاہتی ہے کہ ایسا کیوں اور کس کے لیے ضروری تھا.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں