Nab-Chairman

میں چیئرمین نیب کے ساتھ ہوں….ایک محبِ وطن پاکستانی کے قلم سے

تحریر:محبِ وطن پاکستانی

مجھے یہ دعوی نہیں کرنا ہے کہ وہ فرشتہ صفت ہیں بلکہ درحقیقت پاکستان کے کسی بھی بیورو کریٹ کے متعلق مجھے یہ گمان نہیں ہے. لیکن سردست جو بات اہم ہے وہ یہ کہ چیئرمین نیب سے خطرہ کن لوگوں کو ہے اور چیرمین نیب ان لوگوں کے خلاف کیا کر رہا ہے. وہ اپنی خلوت میں کیا کرتا ہے یا کسی سے فون پہ کیا بات کرتا ہے؟ یہ بالکل غیر اہم اور غیر متعلقہ اشو ہے جس کی جانب قوم کی توجہ موڑنے کی کوشش کی جا رہی ہے. متعلقہ اور اہم بات یہ ہے کہ وہ لوٹ کا مال واپس نکلوانے کےلیے ان کے دباؤ میں آنے سے انکار کر چکا ہوا ہے لہذا اسطرح کی گھٹیا حرکت انکے خلاف کی گئ.

عین ممکن ہے آنے والے دنوں میں اس سے بھی کوئ گھٹیا حرکت کی جائے. لیکن ان سب سے قطع نظر یہ اہم ہے کہ قوم کا لوٹا ہوا پیسہ واپس لانے کےلیے وہ شخص سنجیدہ ہے اور کوئی مفاہمت کرنے پر تیار نہیں.
یہ باخبر لوگوں کا حلقہ ہے کیا ہم میں سے کوئی بھی شخص اس بات سے نا واقف ہے کہ پارلیمنٹ لاجز میں کیا ہوتا ہے؟ مجرے، شراب نوشی، گردا نوشی وغیرہ. آپ میں سے اکثر یہ بھی جانتے ہوں گے کہ بیوروکریسی میں ڈیمانڈ پر لڑکیاں بھی سپلائی کی جاتی ہیں. علاقے کی تمام اچھی کال گرلز سے پولیس واقف ہوتی ہے اور بوقت ضرورت ان کی خدمات بھی لی جاتی ہے.

خود زرداری اور ایان علی کا کردار، پریزیڈنٹ ھاؤس میں زرداری کے دور میں امریکی خواتین کی مستقل رہائش، شہباز شریف کی نصف درجن شادیاں وہ بھی طلاقیں کروا کے یہ سب باتیں ہم جانتے ہیں. لہٰذا میرا خیال ہے کہ اس بات پہ شور کے بجائے فوکس اسی نقطے پہ رکھنا چاہیے کہ وہ بندہ مکمل بے فکری سے اس مافیا سے نبٹ سکے جسے یہ سچا یا جھوٹا بلیک میل کر رہے ہیں.
اس مسئلے کا دوسرا حل بھی ہے. وہ بندا دباؤ میں آ کر استعفیٰ دے کر سائیڈ پہ ہو جائے اور سکون کی زندگی گزارے. وہ بندا اندر خانے ان سے ساز باز کر لے اور موجیں کرتا پھرے.

وہ بندا انہیں اعتماد میں لے کر فرضی کاروائی ڈالتا پھرے. یہ تمام ممکنہ صورتیں بھی ہیں مگر اس میں قوم کا نقصان ہے،میرا آپ کا ہم سب کا. لہٰذا میرے نزدیک بجائے اس بات پر دھیان دینے کے کہ چیئرمین نیب تنہائی میں رومینٹک ہو جاتا ہے عوام کو اس بات پر زور دینا چاہیے کہ وہ اپنے آئینی عہدے کا حق ادا کرے اور کرپٹ عناصر کو مت بخشے. فرض کریں ہم اس ایک ویڈیو کو لے کر انہیں کو نشان عبرت بنا دیتے ہیں کیا کل

کو اگلا چیئرمین نیب مافیا کے خلاف لڑنے کی ہمت کرے گا؟ نہیں. بلکہ وہ قوم کے عمل کو دیکھے گا کہ بابا جس قوم کےلیے لڑتا لڑتا اس نہج پر پہنچا اس قوم نے اسے بدلے میں ذلت و رسوائی دی ایک ایسی آڈیو کے بدلے جس کی اصلیت سے کوئی بھی واقف نہیں تھا. لہٰذا وہ اپنے لیے ایسا انجام نہیں چنے گا. اس لیے چیئرمین نیب کو سپورٹ کریں. یاد رکھیں اپوزیشن اور کچھ مخصوص عناصر کا یہ حربہ کامیاب رہا تو یہی حربہ ہر اس شخص کے خلاف استعمال کیا جائے گا جو اپوزیشن کے مفادات کےلیے خطرہ ہو جس میں پوری کابینہ سمیت عمران خان بھی ذد میں آئے گا.


بل کلنٹن کا سکینڈل یاد ہے وہ حقیقی تھا اور کلنٹن کا بیڑا غرق کر گیا؟ رجب طیب کی یو ٹیوب پر لیکڈ آڈیو یاد ہے ترکی کے سابقہ الیکشن سے پہلے؟ وہ جعلی تھی مگر اس کے باوجود رجب طیب کو پورے ملک سے یوٹیوب اور سوشل میڈیا بند کرنا پڑا کچھ دنوں کےلیے. اور اس بندش کے دوران سازش کے تمام مہرے پکڑے گئے. پاکستان میں میں نہیں توقع کرتا کہ انٹیلی جنس بیورو کے زمی لگایا جائے گا کہ اس سازش کو بے نقاب کرے. باتیں ہوں گی، کیچڑ اچھالا جائے گا. لیکن دیکھنا یہ ہے کہ اس سب کا مقصد کیا ہے؟ مقصد واضح ہے مال ہضم کرنا. اس مقصد کو کامیاب مت ہونے دیں نہیں تو نقصان ہمارا اپنا ہی ہے. وہ لیکڈ آڈیو بالکل جھوٹ ہے کرپشن کے بے تاج بادشاہ بچنا چاہتے ہیں لہذا ان کے فرار میں ان کی کوئی مدد نہ کرے. بلکہ ڈٹ کر نیب کے ساتھ کھڑا رہے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں