imran-khan-and-tahir-ul-qadri

دھرنا 2014: لاہور ہائیکورٹ میں عمران اور طاہر القادری کیخلاف فل بینچ تشکیل

لاہور ہائیکورٹ نے 2014 کے دھرنے پر وزیراعظم عمران خان اور پاکستان عوامی تحریک کے سربراہ طاہرالقادری کے خلاف درخواستوں پر سماعت کے لیے فل بینچ تشکیل دے دیا۔
آئٹم نمبر نہیں کروں گی’، کبریٰ خان

2014 میں پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین و موجودہ وزیر اعظم عمران خان اور پاکستان عوامی تحریک کے سربراہ طاہر القادری کے خلاف درخواستیں درخواست گزار اے کے ڈوگر سمیت دیگر نے دائر کیں تھیں۔
لاہور میں قبضہ گروپوں کے خلاف کریک ڈاﺅن کے لئے ٹاسک فورس تشکیل دے دی گئی
درخواستوں میں عوامی تحریک، جماعت اسلامی، پیپلز پارٹی سمیت دیگر جماعتوں کو فریق بنایا گیا ہے جب کہ درخواست گزار کا مؤقف ہے کہ عدالتی حکم کے باوجود عمران خان اور طاہر القادری نے لاہور سے اسلام آباد کی طرف دھرنا دیا۔
ایل ڈی اے کا غیر قانونی تعمیرات کے خلاف آپریشن ‘ چھ عمارتیں مسمار
درخواست گزار کے مطابق دونوں رہنماؤں نے طویل دھرنا دے کر توہین عدالت کی لہٰذا عدالت عمران خان اور طاہر القادری کیخلاف توہین عدالت کی کارروائی کرے۔
پنجاب اور خیبرپختونخوا یکساں بلدیاتی نظام پر متفق ہوگئے
بینچ کے رکن جسٹس کاظم رضا شمسی کے ریٹائر ہونے کی وجہ سے فل بینچ تحلیل ہوگیا تھا لیکن اب ایک بار پھر لاہور ہائیکورٹ نے فل بینچ تشکیل دیا ہے۔
کرنسی اسمگلنگ کیس ماڈل ایان علی بڑی مشکل میں آ گئیں
جسٹس انوارالحق کی سربراہی میں 3 رکنی بنچ درخواستوں پر سماعت کرے گا جب کہ بینچ کے دیگر اراکین میں جسٹس فیصل زمان خان اور جسٹس عاطر محمود شامل ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں