CM Punjab Usman buzdar

وزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے ملتان ڈویژن سے تعلق رکھنے والے اراکین اسمبلی کے اجلاس کی صدارت کی ۔

وزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے ملتان ڈویژن سے تعلق رکھنے والے اراکین اسمبلی کے اجلاس کی صدارت کی ۔
وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار کی زیرصدارت ملتان ڈویژن کے ارکان صوبائی اسمبلی کا اجلاس ہوا .
ملتان ڈویژن میں فلاح عامہ کے منصوبوں، ترقیاتی کاموں اور عوامی مسائل کے حل کے حوالے سے حکمت عملی پر غور کیا گیا .

وزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کا کہنا تھا کہ جنوبی پنجاب کو الگ صوبہ بنانے کیلئے اقدامات کئے جا رہے ہیں۔ ماضی میں جنوبی پنجاب کی ترقی کے کھوکھلے نعرے لگائے گئے، عملی اقدامات نہیں کئے گئے۔ جنوبی پنجاب کو نظر انداز کرنے والوں کو الیکشن میں بری طرح شکست ہوئی ۔تحریک انصاف کی حکومت جنوبی پنجاب کے عوام کو ان کو حق دے گی۔

انہوں نے کہا کہ ملتان ، ڈیرہ غازی خان، ساہیوال اور بہاولپور میں سیف سٹی پراجیکٹ شروع کریں گے۔پینے کے صاف پانی میں بھی جنوبی پنجاب کو فوقیت دی جائے گی۔ جنوبی پنجاب کے شہروں میں صفائی کی صورتحال ابتر ہے۔ صفائی کے انتظامات کو بہتر سے بہتر بنانا متعلقہ حکام کی ذمہ داری ہے۔ شہروں میں کوڑا کرکٹ کو مناسب طریقے سے تلف کرنے کے سسٹم میں بہتری لائیں گے۔ہم باتیں کم اورکام زیادہ کر رہے ہیں۔

وزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے کہا کہ سی ایم آفس میں اب کوئی فائل زیر التواء نہیں رہتی۔سرکاری محکموں میں شکایات سیل قائم ہوں گے۔ڈی پی اوز کھلی کچہریاں لگائیں گے۔عثمان بزدارٹیم کے ساتھ ڈی جی خان ،ملتان اور بہاولپور کا باقاعدگی سے وزٹ کروں گا۔پولیس اور انتظامیہ غیر جانبدار رہ کر فرائض سرانجام دیں ۔

وزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے مزید کہا کہ کسی کا بھی کوئی غلط کام نہ کیا جائے۔انصاف کے تقاضوں کے مطابق میرٹ پر کام ہونے چاہئیں۔سرکاری افسران عوام کیلئے 2گھنٹے دروازے کھلے رکھیں،رویے بہتر بنائیں اور عوام کو ڈلیور کریں۔عوام کے مسائل صرف سنیں گے ہی نہیں بلکہ حل بھی کریں گے۔

صوبائی وزراء سید حسین جہانیاں گردیزی،جہانزیب خان کھچی،مراد راس، اراکین اسمبلی، انتظامی و پولیس افسران موقع پر تھے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں