cjp-suspended-vice-chancellor-pu

چیف جسٹس آف پاکستان نے پنجاب یونیورسٹی کے وائس چانسلر کو عہدے سے ہٹا دیا

لاہور(نیوز اینڈ ویوز):. سپریم کورٹ نے پنجاب یونیورسٹی کے وائس چانسلر ڈاکٹر زکریا ذاکر کو معطل کرنے کا حکم دے دیا. عدالت میں وائس چانلسر تقرری کیس کے از خود نوٹس کی سماعت کرتے ہوئے ڈاکٹر زکریا ذاکر کو عہدے سے ہٹانے کا حکم دیا . چیف جسٹس آف پاکستان نے ڈاکٹر زکریا زاکر سے پوچھا کہ . کس حیثیت میں یونیورسٹی کی اسی کنال اراضی حکومت کو دی گئی. آپ ہوتے کون ہے اراضی حکومت کو دینے والے؟ .

عدالت نے زمین فراہم کرنیوالے سنڈیکیٹ ممبران کو بھی طلب کرلیا . چیف جسٹس آف پاکستان نے کہا ہے ثابت ہوگیا .حکومت کے جائز و ناجائز مطالبات منوانے کے لیے مستقل وائس چانسلر تعینات نہیں کرتی.
پنجاب یونیورسٹی کے جیالوجی پروفیسر کی اسامی کو جیو فزکس میں تبدیل کرنے کیخلاف درخواست دائر

اڑھائی برسوں سے مستقل وائس چانسلر تعینات کیوں نہیں کیا گیا؟

آگاہ کیا جائے کہ تاخیر کا ذمہ دار کون ہے.؟

سنڈیکیٹ نے کس حیثیت سے یونیورسٹی کیا اراضی حکومت کو دی؟

عدالت کے علم میں ہے اورنج لائن منصوبے کے لیے فراہم کی گئی. چیف جسٹس

حکومتی وکیل خالد رانجھا نے استدعا کی کہ عدالت وائس چانسلر معطلی کے فیصلے پر نظر ثانی کرے.

. ڈاکٹر زکریا زاکر نے عدالت سے کہا کہ میں اپنے عہدے سے استعفے دے دیتا ہوں. اور ابھی استعفے عدالت میں پیش کرتا ہوں.
جس پر چیف جسٹس نے ریمارکس دئیے کہ پہلے آپ استعفے دیں. پھر جائزہ لینگے. جس کے بعد وائس چانسلر ڈاکٹر زکریا ذاکر نے اپنا استعفی تحرری طور پر سپریم کورٹ میں جمع کروا دیا.عدالت نے سینیئر ترین پروفیسر کو عبوری طور وائس چانسلر تعینات کرنے کا حکم بھی دے دیا.

ذرائع کے مطابق ڈاکٹر تقی زاہد بٹ کو پنجاب یونیورسٹی کے قائم مقام وائس چانسلر لگائے جانے کا امکان ہے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں