آشیانہ ہاوسنگ اسکیم اسکینڈل میں احد چیمہ کے شریک ملزم  شاہد شفیق قانون کی گرفت میں

لاہور ہائیکورٹ نے آشیانہ ہاوسنگ اسکیم اسکینڈل میں احد چیمہ کے شریک ملزم  شاہد شفیق کی گرفتاری کیخلاف درخواست کو ناقابل سماعت قرار دے کر مسترد کر دیا ہے 

لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس باقر علی نجفی کی سربراہی میں دو رکنی بنچ نے بسم اللہ انجینئرنگ کے سی ای او شاہد شفیق کی درخواست پر فیصلہ سنایا جس میں درخواست گزار نے اپنی نیب قوانین کے تحت اپنی گرفتاری کو چیلنج کیا تھا.
پنجاب حکومت کے گھپلے کی داستان
  دو رکنی بنچ کے روبرو درخواست گزار ملزم کے وکیل وقار حسن میر نے نشاندہی کی کہ درخواست گزار کیخلاف ان نیب کی ان دفعات کے تحت کارروائی کی گئی ہے جو ختم ہوچکے ہیں اور ان کے تحت گرفتار نہیں کیا جاسکتا. وکیل نے اعتراض اٹھایا کہ نیب نے اختیارات سے تجاوز کرتے ہوئے شاہد شفیق کو گرفتار کیا ہے.
فاروق ستار ایم کیوایم کنوینرکیوں نہیں رہے سکتے
نیب کے وکیل نے درخواست کی مخالفت کی اور واضح کیا کہ  قانونی تقاضے پورے کرنے کے بعد درخواست گزار  شاہد شفیق کو گرفتار کیا گیا ہے. ملزم جسمانی ریمانڈ پر نیب کی تحویل میں ہے. اس لیے درخواست قابل سماعت نہیں ہے. لاہور ہائیکورٹ کے دو رکنی بنچ  نے شاہد شفیق کی درخواست مسترد کر دی اور درخواست گزار ملزم کو  احتساب عدالت سے رجوع کرنے کی ہدایت کی. 

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں