کیا نواز شریف مستعفی ہو جائیں گے؟

15 جون بروز پیر میاں محمد نواز شریف جے آئی ٹی کے سامنے پیش ہوں گے.
دوسری جانب عمران خان کا مطالبہ ہے کہ وزیراعظم میاں نواز شریف جے آئی ٹی کی تحقیقات میں شامل ہونے کے لیے اپنے عہدے سے مستعفی ہوں تاکہ جے آئی ٹی کی تحقیقات مکمل طور پر شفاف ہو سکے ان کے وزیراعظم رہتے ہوئے یہ ممکن نہیں ہے.
ماضی میں پیپلز پارٹی کے دور اقتدار میں سا بق وزیراعظم یوسف رضا گیلانی کو بذات خود میاں محمد نواز شریف نے اس وقت مستعفی ہونے کا مشورہ دیا تھا جب ان کا کیس عدالت عظمی میں چل رہا تھا.
میاں نواز شریف نے کہا تھا کہ وزیراعظم یوسف رضا گیلانی اس وقت تک مستعفی ہو جائیں جب تک عدالت عظمی کا فیصلہ نہیں آ جاتا اگر فیصلہ ان کے حق میں آجائے تو واپس اپنا عہدہ سنبھال لیں اگر خلاف آئے تو پوری طرح گھر بیٹھ جائیں .
ہو سکتا ہے کہ میاں نواز شریف ایک نئی مثال قائم کرتے ہوئے اپنے عہدہ سے مستعفی ہو جائیں.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں