کبھی بلا کبھی کٹھ پتلی!

ہر دور میں کرپٹ سیاست دان فوج سے مسی انجانے خوف میں مبتلا دیکھائی دیت ہیں.
مثلا کراچی آپریشن کے دوران جب پیپلزپارٹی کے کرپٹ لوگوں پر شکنجہ تنگ کیا جا رہا تھا تو زرداری صاحب کا ایک خاص جملہ جو انہوں نے آرمی کے بارے میں کہا سیاسی اور صحافتی حلقوں میں بڑا مقبول ہوا.
انہو نے کہا تھا کہ بلا آتا ہے اور دودھ پی کر چلا جاتا ہے
اس جملے میں ڈھکے چھپے الفاظ میں زرداری صاحب نے فوج کو تنقید کرنے کی کوشش کی تھی.
اور آج میاں نواز شریف کسی حریف کو کٹپتلی کہ کر فوج کی طرف کچھ اسی قسم کے اشارے کرتے دیکھائی دیتے ہیں جب کبھی بھی حکمرانوں کو اپنی کرپشن منظر عام پر آتی ہو دیکھائی دیتی ہے فوج کو ہی حرف تنقید بنایا جاتا ہے.
ہر دور میں کرپٹ حکمران فوج سے خوفزدہ دیکھائی دیتے ہیں.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں