ڈاکٹر عاصم کی بیرون ملک روانگی ایک بار پھر تعطل کا شکار

سابق مشیر پیٹرولیم ڈاکٹر عاصم کا نام ای سی ایل سے خارج کرنے سے متعلق دائر درخواست پر وفاقی حکومت نے جواب داخل کرنے کے لیےسندھ ہائی کورٹ سے مہلت طلب کر لی، مزید سماعت 9 مئی تک ملتوی کردی گئی۔

سندھ ہائیکورٹ میں درخواست کی سماعت پر ڈاکٹر عاصم کے وکیل لطیف کھوسہ نے سفری اور اسپتال میں داخلے سے متعلق تفصیلات عدالت میں پیش کیں۔

اپنے دلائل میں لطیف کھوسہ نے کہا کہ ڈاکٹر عاصم شدید علیل ہیں، علاج کے لئے بیرون ملک جانا ضروری ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ ڈاکٹر عاصم نے لندن جانے کے لئے سات مئی جبکہ واپسی کے لیے 22 مئی کی ٹکٹ بھی لے رکھی ہے، اگر بروقت علاج نہیں ہوا تو وہ مفلوج ہو سکتے ہیں۔

وفاقی حکومت کی جانب سے جواب داخل کرنے کی مہلت طلب کرنے پر سماعت 9 مئی تک ملتوی کردی گئی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں