پینےکے صاف پانی کی عدم دستیابی، شیخوپورہ کے مکین سراپا احتجاج

شیخوپورہ(نمائندہ خصوصی) شیخوپورہ میں پینے کے صاف پانی کی عدم دستیابی کے شکار شہریوں کا وزیر اعلیٰ پنجاب شہباز شریف، میٹروبس سروس اور اورنج ٹرین منصوبہ کی کراس زدہ تصاویر اٹھا کر شدید احتجاج کیا مظاہرین میں کاہنیانوالہ اور ٹیوب ویل نمبر 28 سمیت وارڈ نمبر 48 کی دیگر ملحقہ بستیوں کے مقامی رہائشی شامل تھے، احتجاجی مظاہرے کی قیادت خود حلقہ کونسلر چوہدری عمر حیات گوپے راء نے کی اور دیگر مظاہرین کے ہمراہ روڈ بلاک کرکے مرکزی و صوبائی حکومت سمیت ضلع حکومت اور تحصیل میونسپل کمیٹی شیخوپورہ کے خلاف گھنٹوں شدید نعرے کرتے رہے ، احتجاجی مظاہرہ میں شامل حافظ محمد عثمان ، مرتضیٰ ورک، و دیگر نے بتایا کہ مضر صحت پانی کے استعمال کے باعث متعدد افراد مختلف امراض میں مبتلا رہنے کے بعد زندگی کی بازی ہار چکے ہیں جبکہ سینکڑوں لوگ اب بھی سانس اور پیٹ کی بیماریوں کا شکار ہونے کے باعث زندگی اور موت کی کشمکش میں مبتلا ہیں ، کونسلر چوہدری عمر حیات گوپے راء نے میڈیا کو بتایا کہ مضر صحت پانی کے استعمال جیسے سنگین مسئلہ کی بابت بار بار متعلقہ حکام کی توجہ دلائی گئی مگر نہ تو کسی سرکاری ادارے نے اس حوالے سے کوئی عملی اقدام اٹھایا اور نہ ہی میونسپل کمیٹی اور صوبائی و مرکزی حکومت نے ہماری داد رسی کی ، ہمیں میٹرو ٹرین اور گرین لائن منصوبہ نہیں صحت مند زندگی چاہئے جو صاف پانی کی دستیابی کے بغیر ممکن نہیں، انہوں نے کہا کہ وزیر اعلیٰ شہباز شریف اگر پینے کا صاف پانی نہیں دے سکتے تو انہیں سندھ حکومت اور کراچی انتظامیہ پر بھی تنقید کا کوئی حق نہیں کیونکہ جن حالات سے کراچی گزر رہا ہے پنجاب کے پسماندہ اضلاع کی عوام کی حالت بھی اس سے قطعی مختلف نہیں، انہوں نے اعلان کیا کہ اگر ہمارے مطالبات کو تسلیم نہ کیا گیا تو ہمارے احتجاج کا سلسلہ جاری رہے گا

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں