پارٹی فنڈنگ کیس الیکشن کمیشن نے عمران خان کو آٹھ مئی تک مہلت دے دی

الیکشن کمیشن نے پارٹی فنڈنگ کیس میں تحریک انصاف کو توہین عدالت کا جواب داخل کرانے کے لیے 8 مئی تک کی مہلت دے دی ہے۔

چیف الیکشن کمشنر سردار رضا خان کی سربراہی میں 4 رکنی بنچ نے الیکشن کمیشن میں تحریک انصاف پارٹی فنڈنگ کیس کی سماعت کی۔ سماعت کے دوران اکبر ایس بابر نے پی ٹی آئی کی رکنیت اور نکالے جانے کا ریکارڈ الیکشن کمیشن میں جمع کرادیا جب کہ ان کے وکیل کا کہنا تھا کہ سیکرٹری اطلاعات سے ہٹایا گیا لیکن پارٹی سے نہیں نکالا گیا لہذا پی ٹی آئی نے ممنوعہ ذرائع سے فنڈز اکٹھے کیے جس پر وکیل پی ٹی آئی انور منصور کا کہنا تھا کہ کوئی پارٹی رکن ہویا نہ ہو، الیکشن کمیشن میں درخواست دائرنہیں کرسکتا جب کہ اکبر ایس بابر کے پارٹی کے خلاف بیانات کا ہمارے پاس بھی بہت مواد ہے، انہوں نے بیان دیا کہ میں فلاں فلاں کو سڑک پر لے آؤں گا، چیف الیکشن کمشنر نے انورمنصور سے مکالمہ کرتے ہوئے کہا کہ الفاظ کے استعمال میں تو آپ بھی محتاط نہیں ہیں جب کہ عمران خان کی توہین عدالت کی درخواست کا جواب کہاں ہے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں