وفاقی وزارت داخلہ کی ڈاکٹر عاصم کا نام ای سی ایل سے خارج کرنے کے خلاف درخواست

وزارت داخلہ کا کہنا ہے کہ سندھ ہائی کورٹ کی سفارش اور نیب کی درخواست پر سابق مشیر پیٹرولیم ڈاکٹرعاصم کا نام ای سی ایل میں شامل کیا گیا اور اب وہ بیماری کا بہانہ بنا کر ملک سے فرار ہونا چاہتے ہیں۔
وفاقی وزارت داخلہ نے سابق مشیر پیٹرولیم ڈاکٹرعاصم حسین کا نام ای سی ایل سے خارج کرنے کے خلاف سندھ ہائی کورٹ میں جواب جمع کرادیا ہے۔ وزارت داخلہ کی جانب سے جمع کرائے گئے جواب میں کہا گیا ہے کہ سابق مشیر پیٹرولیم پر سنگین الزامات ہیں اوران سمیت ان کے شریک ملزمان پر بھی کرپشن کے 2 ریفرنسز دائر ہوچکے ہیں جن کی مزید تحقیقات جاری ہیں جب کہ وفاقی وزارت داخلہ نے ڈاکٹرعاصم حسین کا نام ای سی میں نیب کی درخواست پر شامل کیا اور اس حوالے سے سندھ ہائی کورٹ نے بھی سفارش کی تھی۔
جواب میں استدعا کرتے ہوئے کہا گیا ہے کہ سندھ کی اعلیٰ عدالت نے بھی ڈاکٹرعاصم کو اس شرط پر ضمانت دی تھی کہ وہ ملک سے باہر نہیں جائیں گے لیکن اب سابق مشیر پیٹرولیم بیماری کا بہانہ بنا کر ملک سے فرار ہونا چاہتے ہیں اس لئے ان کا نام ای سی ایل سے خارج نہیں کیا جاسکتا عدالت بھی ڈاکٹر عاصم کی درخواست مسترد کرے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں