نواز شریف وزیر اعظم رہے تو جے آئی ٹی کی شفاف تحقیقات ممکن نہیں. شاہ محمود قریشی

پی ٹی آئی کے رہنما شاہ محمود قریشی جمشید دستی سے ملنے سینٹرل جیل ملتان پہنچے تو انہیں انتظامیہ نے ملنے کی اجازت نہیں دی.
جیل کے باہرپولیس حکام اور رہنما تحریک انصاف کے درمیان بحث و تکرار بھی ہوئی، اس موقع پر تحریک انصاف کے رہنما نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ حکومت پر تنقید کرنے والوں کے خلاف انتقامی رویہ اختیار کیا جا رہا ہے.
تحریک انصاف کے رہنما شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ حکومت بوکھلاہٹ کا شکار ہے، کیونکہ جےآئی ٹی میں مناسب جواب نہیں دے پا رہی، جے آئی ٹی کو متنازع بنا کر بائیکاٹ کرنے کا منصوبہ بنایا جارہاہے ۔
شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ نوازشریف وزارت عظمیٰ کے عہدے پر رہیں گے تو جے آئی ٹی پردباؤ بنا رہے گا،مسلم لیگ ن قانون اورانصاف کی راہ میں رکاوٹ بنی توہم قانونی اداروں کے ساتھ ہوں گے۔
شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ جمشید دستی کیخلاف کارروائی میں انتقام کی بو آرہی ہے، شیخ رشید پر حملہ کرایا گیا اورجمشید دستی پر ایسے مقدمات بنائے گئے جن کا علم ہی نہیں۔
اجازت نہ ملنے پر شاہ محمود قریشی جمشید دستی سے ملے بغیر ملتان سینٹرل جیل سے واپس چلے گئے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں