نامعلوم افراد، کیا واقعی ایک فحش فلم ہے….از منیب خان ملیزئی

نیوز ویوز (بلاگ):جمعرات کو “کنگز مین،دی گولڈن سرکل دیکھنے گیا تو سینما جا کر پروگرام بدل گیا اور نامعلوم افراد کی
ٹکٹ لی اور مطعلقہ ہال میں جاپہنچا فلم شروع ہوئی تو لگا کہ ارادہ تبدیل کر کے غلطی کی لیکن کچھ ہی دیر میں فلم دلچسپ ہو گئی اور خوب انجوے کیا اور ساتھ ہی ساتھ یہ بھی لگا کہ پاکستانی انڈسٹری اسی ڈگر پر چلتی رہی تو اور کچھ سالوں میں بالی ووڈ کے مقابل ہو گی ۔لیکن آج اخبار دیکھا تو بہت دکھ ہوا کہ پنجاب میں فلم پر پابندی لگا دی گئی اور الزام فحاشی اور عریانی کا لگایا گیا ہے ۔
اسی حوالہ ایک دفعہ لیاقت بلوچ صاحب سوال کیا کہ اپ ہندوستانی فلموں کے خلاف احتجاج کرتے ہیں کچھ عرصہ کی پابندی کے بعد فلمیں جوں کی توں چلتی رہتی ہیں کیا کوئی مستقل فیصلہ کی کوشش کیوں نہیں کی جاتی ؟
مسکرا کر کہنے لگے کہ
” یہ چلاتے رہیں گے اور ہم احتجاج کر کے بند کرواتے رہیں گے ۔ ”
فحاشی تو بولی ووڈ اور ہالی ووڈ کی فلموں میں بھی پاکستانی دیکھ لیتے ہیں نہیں تو انٹرنیٹ پر پراکسی لگا کر تمام مناظر تقریباً مفت میسر ہوتے ہیں اگر پابندی لگانی ہے تو ان ذرائع پر لگانی چاہیے
اگر پاکستانی فلم انڈسٹری مستحکم ہوگی تو ہمارا لوگ ہندوستانی زہریلے پراپرگنڈا سے بچ سکئیں گے اور پاکستانی موقف کی بھی تشہیر میں آسانی ہوگی .اور اگر فحش فلموں پر پابندی لگانی ہی ہے تو پہلے بالی ووڈ ‘ ہالی ووڈ اور پُورن انڈسٹری کے راستہ کی دیوار بنئیں نہیں تو لولی ووڈ کے راستہ کا پتھر بننے سے سے گریز کرئیں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں