مشال خان قتل کیس فوجی عدالت کے حوالے کیا جائے. قائمہ کمیٹی برائے داخلہ

مشال خان قتل کیس سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے داخلہ نے فوجی عدالت بھیجنے کی سفارش کردی۔

چیئرمین کمیٹی رحمان ملک کا کہنا ہے کہ مشال خان قتل کیس فوجی عدالت کے حوالے کیا جائے۔

سینیٹر جاوید عباسی کا کہنا تھاکہ مشال خان کو مارنے والوں کو سخت سزا دینی چاہیے، معاملے کو لٹکانے کیلئے جوڈیشل انکوائری بنادی گئی ہے.

سینیٹ کمیٹی مردان واقعے کی ویڈیو سوشل میڈیا پربلاک کرنے کی سفارش بھی کردی۔

چیئرمین کمیٹی کے مطابق ہجوم پراسیکیوٹر، انویسٹی گیٹر اور جلاد نہیں بن سکتا، توہین مذہب سے متعلق قانون موجود ہے اس پر عمل ہونا چاہیے، توہین مذہب کے جھوٹے الزام پر بھی وہی سزا ہونی چاہیے
جو توہین مذہب کرنے والوں کی ہے.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں