مریم نواز کو بچانے کے لیے 3 بکروں کی قربانی دی گئی. اعتزازاحسن

سینیٹ کےاجلاس میں قائد حزب اختلاف اعتزاز احسن نے اظہار خیال کرتے ہوئے کہا ہے کہ میں وہ شخص ہوں جس نے 4 ملٹری ڈکٹیٹرز کے خلاف جنگ لڑی، ہم نے ملٹری ڈکٹیٹرز کا سامنا کیا اور پرویزمشرف کو بھگایا جب کہ وزیراعظم کے احکامات میجرجنرل نے مسترد کیے تو سب سے پہلے میں بولا، میں نے ایک گھنٹے کے اندر متعلقہ ٹویٹ پر جواب دیا۔ ان کا کہنا تھا کہ ملک میں کوئی مقدس گائے نہیں میں اپنے اسٹینڈ پر قائم ہوں جب کہ ڈان لیکس سے متعلق 10 روز بعد آنے والے نوٹیفیکیشن میں کچھ نہیں، پرویز رشید شریف النفس ہیں انہوں نے اپنی زبان روک رکھی ہے جب کہ وزیراعظم کہتے ہیں میں دوستوں کو کبھی نہیں چھوڑتا، مشاہداللہ خان کے ساتھ بھی ایسا ہی ہوا.

اعتزاز احسن نے کہا کہ خبر اگر لیک ہے تو درست نہیں لیکن اگر کچھ بھی نہیں تھا تو خطرناک بات ہے، حکومت نے اس معاملے میں 3 بکرے قربان کردیے، پرویزرشید اور طارق فاطمی ایسا نہیں کرسکتے  تاہم راوٴ تحسین کو میں نہیں جانتا، ایسے اشخاص کو قربانی کا بکرا بنا رہے ہیں جو میٹنگ میں تھے ہی نہیں جب کہ وزراء کے بیان بھی آپس میں نہیں ملتے۔ انہوں نے کہا کہ شیخ آفتاب محنتی وزیر ہیں ان کی بھی جلد چھٹی ہوجائے گی لیکن معذرت کے ساتھ اس معاملے میں ہم وزیر پارلیمانی امور کو نہیں سنیں گے،شیخ آفتاب کی بہت عزت کرتے ہیں .

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں