فوج پر کیچڑ اچھالنے والے اپنے داغدار ماضی پر بھی ایک نظر

مشہور صحافی متیع اللہ جان جو کہ اکثر اپنی تحریروں میں پاکستان آرمی کے خلاف زہر اگلتے نظر آتے ہیں
اصل میں متیع اللہ جان خود ایک ریٹائرڈ فوجی کے بیٹے ہیں اور پی ایم اے لانگ کورس سے موصوف کو ڈرم آوٹ کرنے کی خبریں آج کل سو شل میڈیا پر گردش کر رہی ہیں.

ڈرم اوٹ کی اصلاح بنیادی طور پر اسے کیڈٹس کے لیے استعمال کی جاتی ہے جو کہ اکیڈمی میں غیر اخلاقی سرگرمیوں میں ملوث پائے جاتے ہیں.ڈرم اوٹ ایسے کیڈٹ کو اکیڈمی سے فارغ کرنے یا نکالنے کا طریقہ کار ہے . ڈرم اوٹ میں کیڈٹ اکیڈمی کے تمام کیڈٹ داخلی راستے پر دونوں جانب لائن بنا کر کھڑے ہو جاتے ہیں اور وہ کیڈٹ جو غیر اخلاقی سرگرمیوں میں ملوث ہوتا ہے کیڈٹس کی لائینز کے درمیان سے گزرتا ہے جبکہ ڈھول کی تھاپ پر ایسے کیڈٹ کو کاکول اکیڈمی سے نکالا جاتا ہیں
متیع اللہ جان شاید اس زلت کے ساتھ کاکول اکیڈمی سے نکالے جانے پر آج بھی سیخ پا ہیں اور اپنی زاتی انا کی تسکین کی خاطر فوج پر کیچڑ اچھال رہے ہیں.
جبکہ وہ جانتے ہیں کہ کاکول اکیڈمی سے پاس آوٹ ہونے والا ہر کیڈٹ ملک و قوم کی خاطر جان دینے کے لیے حلف اٹھاتا ہے اور ہمہ وقت اپنی جان کا نظرانہ پیش کرنے کے لیے تیار رہتا ہے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں