عمران خان نے وکلاءاورعوام کوکال دے دی

نیوز ویوز (اسلام آباد) : چیر مین تحریک انصاف کا عوام کو تیار رہنے کی ہدایت کر دی۔ ن لیگ سپریم کورٹ پر حملہ کرنے کی تیاری کر رہی ہے۔ عمران خان نے پی ٹی آئی رہنماوں کو  کل سپریم کورٹ نہ جانے کی ہدایت کر دی۔

یہ بات انہوں نے اسلام آباد میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہی، عمران خان نے کہا کہ ججز نے اپنے فیصلے میں واضح طور پر کہا تھا قطری شہزادے نےبیان نہ دیا تو یہ خط ردی کا ٹکڑا ہے اور لیگی وزراء کہتے ہیں کہ قطری کا بیان لیے بغیررپورٹ نہیں مانیں گے جبکہ قطری شہزادے کو پیش کرنا شریف خاندان کی ذمہ داری تھی۔

انہوں نے کہا کہ شریف خاندان پرالزام لگا ہے تو ان کو ہی ثبوت پیش کرنا ہوں گے، قطری شہزادہ تلور کا شکار کرنے تو پاکستان آجاتا ہے اب کیوں نہیں آرہا؟ لگتاہے بات پھر1997کی طرح سپریم کورٹ پرحملے کی طرف جارہی ہے۔

چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان کا کہنا تھا کہ کیا پاکستان کوئی’’بناناریپبلک‘‘ ہے یا آپ اسے بنانا ریپبلک بنانا چاہتے ہیں، سارے ادارے تو ان لوگوں نے تباہ کر دیئے ہیں۔

عمران خان نے کہا کہ جےآئی ٹی میں پیشی کے بعد ان کے منہ سوجے ہوئے ہوتے تھے اور پیشی کے فوراً بعد ان کو عمران خان یاد آجاتا تھا، باہر نکلتے ہی معصومیت سے کہتے تھے کہ ہماراجرم کیا ہے پھر کہتےہیں کہ ہمارے سوالوں کے جواب نہیں دیئے۔

انہوں نے جےآئی ٹی کو سازش قرار دیا ہے جبکہ مسلم لیگ ن خود 3سال سے عوام کو بےوقوف بنا رہی ہے، انہوں نے کہا کہ (ایس ای سی پی) کی ٹیمپرنگ کابھی انکشاف ہوگیا ہے، سپریم کورٹ نے ایف آئی اے کو کہا تو انہوں نے ایس ای سی پی کو پکڑا۔

عمران خان نے کہا کہ یہ لوگ اب سپریم کورٹ اور فوج کےخلاف لگ گئے ہیں جبکہ مریم نواز نے نئےآرمی چیف اور چید جسٹس کی آمد پر اپنے ٹوئٹ میں خوشی کا اظہار کیا تھا، مریم نواز نے یہ تاثر دیا تھا کہ چیف جسٹس اور آرمی چیف ہمارے آدمی ہیں، آج یہ ہی لوگ چیف جسٹس اور آرمی چیف کےخلاف بیانات دے رہےہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں