عظمی کیس عدالت کا وزارت خارجہ سے جواب طلب

 یکم مئی کو پاکستانی شہری طاہر سےشادی کرنےوالی بھارتی خاتون عظمیٰ نے اپنے ملک واپس جانے کے لیے اسلام آباد ہائی کورٹ میں درخواست دائر کردی ہے جس میں عظمیٰ نے اپنے شوہر اور وزارت خارجہ کو فریق بنایا ہے، درخواست میں عدالت سے استدعا کی گئی ہے کہ اس کی 5 سال کی بیٹی بھارت میں شدید بیمار ہے۔ اس لیے اسے پولیس رپورٹنگ سے استثنیٰ اور بھارت واپس جانے کی اجازت دی جائے۔

درخواست میں کہا گیا ہے کہ طاہرعلی نے دھوکے سے شادی کی اور سفری دستاویزات بھی چھین لیں لہذا بھارت واپسی کے لیے وزارت خارجہ کو ڈپلی کیٹ امیگریشن فارم جاری کرنے کی ہدایت کی جائے جب کہ اسلام آباد سے واہگہ بارڈر تک سفر کے دوران سیکورٹی فراہم کی جائے اورطاہرعلی کو ہراساں کرنے سے روکا جائے۔ بعد ازاں عدالت نے  وزارت خارجہ کو نوٹس جاری کرتے ہوئے 22 مئی کو جواب طلب کرلیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں