دہشت گردوں نے سی ٹی ڈی اور پولیس پر حملوں کے لیے دو نئے گروپ تشکیل دے دیے

دہشت گردوں نے سی ٹی ڈی اور پولیس افسران پر حملوں کے لیے دو نئے گروپ تشکیل دے دیے ہیں.
دیشت گرد لاہور، ملتان،فیصل آباد، راولپنڈی ،شیخوپورہ ، بہاولپور سمیت ملک کے دیگر حصوں میں پولیس افسران اور سی ٹی ڈی کو نشانہ بنا سکتے ہیں. حساس اداروں نے قانون نافذ کرنے والے اداروں کو مطلع کیا ہے کہ عمر منصور گروپ نے 15 سے 16 دہشت گردوں پر مشتمل ایک گروپ تشکیل دیا ہے اس گروپ کا نام لشکر زمرانی ہوگا.
مجاہد اختر عرف رحمت اللہ عرف کمانڈر حماد اس گروپ کا سربراہ مقرر کیا گیا ہے.
گروپ میں شامل تمام دہشت گرد خودکش بمبار ہیں.کچھ عرصہ قبل سی ٹی ڈی نے بہت سے دہشتگردوں کو ہلاک کیا تھا زمرانی گروپ ان کا بدلہ لی ا چاہتا ہے.
دوسری جانب جماعت الاحرار نے پولیس افسران پر حملوں کے لیے نیا گروپ تشکیل دیا ہے جس کا نام لشکر ضرار رکھا ہے. اس گروپ کاسربراہ زاہد بابر عرف کمانڈر مظہر ہوگا.کمانڈر مظہر کا تعلق بلوچستان سے ہے.ڈی آئی جی آپریشن ڈاکٹر حیدر اشرف کا کہنا ہے
کہ مال روڈ دھماکے کے بعد پولیس افسران کی زیادہ خطرےکے باعث سیکیورٹی بڑھا دی گئی ہے.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں