خیبرپختونخوا کی خصوصی ایپکس کمیٹی کا اجلاس،دہشتگردی اور عسکریت پسندی کو جڑ سے اکھاڑنے کیلیے کوششیں جاری رکھنے کا عزم:آئی ایس پی آر

راولپنڈی (ڈیلی پاکستان آن لائن) خیبرپختونخوا کی خصوصی ایپکس کمیٹی کا پشاور میں اجلاس ہوا جس میں دہشتگردی اور عسکریت پسندی کو جڑ سے اکھاڑنے کیلیے کوششیں جاری رکھنے کا عزم کیا گیا،اجلاس میں آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کی خصوصی شرکت۔

پنجاب حکومت کا صوبے میں موٹر بائیکس پر مشتمل نئی ایمبولینس سروس شروع کرنے کا فیصلہ

پاک فوج کے ادارہ برائے تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر ) کے مطابق اجلاس میں نیشنل ایکشن پلان پربھرپورعملدرآمدکے لئے مشترکہ کوششیں جاری رکھنے اور خیبر پختونخوا میں سیکیورٹی کی صورتحال پر غور کیا گیا، ملک بھر میں جاری آپریشن رد الفساد میں پیش رفت کا جائزہ اور بارڈر مینجمنٹ سے متعلق معاملات بھی زیر غور آئے۔ فوج،انٹیلی جنس اور قانون نافذ کرنے والی ایجنسیوں کی کار کردگی کوبھی سراہاگیا۔ کورکمانڈرپشاور،گورنر اور وزیراعلیٰ خیبر پختونخوانے بھی اجلاس میں شرکت کی۔
آئی ایس پی آر کا کہنا تھا کہ89فیصد ٹی ڈی پیز واپس جاچکے ہیں جبکہ فاٹا کا93 فیصد علاقہ ڈی نوٹیفائی ہو گیا ہے۔اجلاس میں افغان مہاجرین کی موجودگی سے پیدا ہونے والے مسائل کا جائزہ ،ٹی ڈی پیز کی آباد کاری کے لئے متعلقہ اداروں کی کاوشوں کا اعتراف اورفاٹاکوقومی دھارے میں لانے کے لئے سہولت دینے کے عمل پربھی غورکیاگیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں