تراویح کے اوقات میں لوڈشیڈنگ سے سیکیورٹی خطرات پیدا ہورہے ہیں. وزیر داخلہ سندھ

وزیر داخلہ سندھ سہیل انور سیال نے سیکیورٹی انتظامات کا جائزہ لینے کے لئے حیدرآباد کی مختلف مساجد کا دورہ کیا۔ اس موقع پر میڈیا سے بات کرتے ہوئے سہیل انور سیال کا کہنا تھا کہ سیہون دھماکے سمیت ماضی میں ہونے والے دہشت گردی کے تمام واقعات تقریباً رات کے اندھیرے میں کئے گئے اور اب بھی دہشت گردی رات کے اندھیرے اور لوڈشیڈنگ کا فائدہ اٹھاسکتے ہیں جب کہ سحروافطار اور تراویح کے اوقات میں لوڈشیڈنگ سے سیکیورٹی خطرات پیدا ہورہے ہیں۔
وزیرداخلہ نے کہا کہ پارٹی قیادت کی جانب سے دوبارہ مجھے اس منصب پر لائے جانے کا مقصد عوام کی خدمت کرنا ہے اور اس مقصد کو حاصل کرنا میری اولین ترجیح ہے۔ ان کاکہنا تھا کہ آئی جی سندھ اے ڈی خواجہ سے کوئی مسئلہ نہیں، معاملہ اس وقت عدالت میں زیرسماعت ہے بہر حال ادارے کسی ایک شخصیت سے نہیں چلتے، شہر قائد کے حالات بہتر بنانے میں پاک فوج، رینجرز اور حساس اداروں کا اہم کردار رہا ہے تاہم پولیس کی معاونت بھی انتہائی ضروری ہے.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں