بھارتی ریاست آسام میں 2 مسلمان گاو رکشہ کے نام پر ہندوانتہا پسندوں کے ہاتھوں قتل

بھارتی ریاست آسام میں ہندو انتہا پسندوں نے مبینہ گائے چوری کے الزام میں مزید دو مسلمان نوجوانوں کو قتل کردیا۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق آسام کے ضلع ناگون میں گاو ٔرکشا کے نام پر “ابو حنیفہ اور ریاض الدین “نامی نوجوانوں کو انسانیت سوز تشدد کے بعد قتل کردیا گیا۔

مقامی پولیس کے مطابق مشتعل ہجوم نے دونوں نوجوانوں پر گائے چوری کا الزام لگایا اور شدید تشدد کانشانہ بنایا۔

بی جے پی کی حکومت بننے کے بعد بھارت میں انتہا پسندوں کی جانب سے گاؤ رکشا کے نام پر مسلمانوں پر حملوں کے واقعات میں خطرناک حدتک اضافہ ہوا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں