بنی گالا تجاوزات کے خلاف سپریم کورٹ کے ازخود نوٹس پر سی ڈی اے کا جواب.چیف جسٹس ثاقب نثار کی عمران خان کو تنبیہ

بنی گالہ میں تجاوزات کے خلاف سپریم کورٹ کے ازخود نوٹس کیس کی سماعت،سی ڈی اے نے جواب جمع کرادیا۔

سی ڈی اے کی جانب سے سپریم کورٹ کولکھےگئےخط کےفوری بعدانتظامیہ نےبنی گالہ میں تعمیرات پرپابندی لگادی ہے۔

چیف جسٹس پاکستان جسٹس میاں ثاقب نثار نے ریمارکس دئیے کہ دیکھناہےکہ بنی گالا میں پلازےقانون کے مطابق ہیں یا نہیں، جو درخت کٹ گئے وہ واپس نہیں لائے جا سکتے۔

چیف جسٹس آف پاکستان کا عمران خان سے کہنا تھا کہ خان صاحب،آپ مصروف آدمی ہیں، روزعدالت آنےکی ضرورت نہیں، آپ ایک اچھی لیگل ٹیم بھیج دیں جو عدالت کی رہنمائی کرسکے۔
بنی گالہ میں تجاوزات کے خلاف سپریم کورٹ میں ازخود نوٹس کیس کی سماعت کے دوران سی ڈی اے نے جواب جمع کرادیا۔

سی ڈی اے کے جواب میں کہا گیا ہے کہ سپریم کورٹ کولکھےگئےخط کےفوری بعدانتظامیہ نےبنی گالہ میں تعمیرات پرپابندی لگادی ہے۔

چیف جسٹس پاکستان جسٹس میاں ثاقب نثار نے ریمارکس دئیے کہ دیکھناہےکہ بنی گالا میں پلازےقانون کے مطابق ہیں یا نہیں، جو درخت کٹ گئے وہ واپس نہیں لائے جا سکتے۔

چیف جسٹس پاکستان کا کہنا تھا کہ خان صاحب،آپ مصروف آدمی ہیں، روزعدالت آنےکی ضرورت نہیں، آپ ایک اچھی لیگل ٹیم بھیج دیں جو عدالت کی رہنمائی کرسکے۔

چیف جسٹس نےکہا کہ لوگ اعتماد کی وجہ سے عدالتوں میں آتے ہیں، بداعتمادی کی فضا ختم کرنا ہوگی، ہر لیڈر کو کہتے ہیں قبلہ راست ہوجائیں، سب کو عدالتوں کا احترام کرنا چاہئے.
جسٹس ثاقب نثار کا عمران خان سےکہنا تھا کہ اختلافی نوٹ ہر جگہ لکھے جاتے ہیں
لین اتنا شور شرابہ دنیا میں کہی نہیں ہوتا جتنا ہمارے ملک میں ہوتا ہے.
نظام اور عدلیہ کے لیے یہ وقت اہم ہے، ادارے مضبوط ہوں گے تو ملک آگے بڑھے گا، ہم سب کو مل کر ملک کے تشخص کے لیے کام کرنا ہے، آپ عام آدمی نہیں، آپ کی آواز سےبہتری بھی آسکتی ہےخرابی بھی، موجودہ حالات میں آپ کو اہم اور تعمیری کردار ادا کرنا ہے، آپ قوم کو بےاعتمادی کی فضا سے نکالنے میں اپنا کردار ادا کریں۔
چیف جسٹس کا کہنا تھا کہ انہوں نے عمران خان کی کپتانی میں کرکٹ بھی کھیلی ہے.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں