بابری مسجد شہادت،ایل کے ایڈوانی سمیت بی جے پی کے رہنماؤں کے خلاف کیس بحال

بھارتی سپریم کورٹ نے بابری مسجد کیس کا فیصلہ سناتے ہوئے مسجد شہید کرنے کی سازش میں شامل بی جے پی رہنماؤں کیخلاف کیس بحال کردیاہے.

بھارتی سپریم کورٹ نے ایل کے ایڈوانی کے خلاف سی بی آئی کی اپیل پر کیس بحال کردیا، سی بی آئی کی اپیل,کے تحت ایل کے ایڈوانی سمیت بی جے پی کے دیگر رہنماؤں کے خلاف بابری مسجد شہید کرنے کی سازش کے الزامات بحال ہوگئےتاہم کلیان سنگھ کے گورنر رہنےتک ان کے خلاف کیس رجسٹر نہیں کیاجا سکے گا۔

عدالت نے بابری مسجد کیس 4 ہفتے میں رائےبریلی سےلکھنو منتقل کرنے کا بھی حکم دیا ہے

بھارتی سپریم کورٹ نے قرار دیا کہ معمول کےحالات میں بابری مسجدمقدمےکےدوران کوئی التوا نہیں ہوگا، اس مقدمے کے کسی جج کو ٹرانسفر نہیں کیاجائے گا.
6 دسمبر 1992 کو انتہا پسند ہندوؤں نے بابری مسجد کو شہید کر دیا تھا.
بابری مسجد شہید کیے جانے کے بعد پورے ہندوستان میں ہندوؤں مسلم فسادات شروع ہو گئے تھے.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں