انسانوں نے ہجرت کب کب اور کیوں کی، نئی تحقیق

ایک نئی تحقیق میں بتایاگیا ہے کہ افریقہ کے انتہائی سرد اور خشک موسم کی وجہ سے انسانوں نے اس خطے سے دنیا کے علاقوں کی جانب ہجرت کی۔
اس تحقیق میں گزشتہ دو لاکھ سال کے دوران دنیا کے مختلف حصوں کے درجہ حرارت اور موسم کے کمپیوٹرائزڈ اعداد و شمار کا جائزہ لیا گیا ہے۔
یونیورسٹی آف ایریزونا کے ماہرین کے مطابق 75 ہزار سال قبل افریقہ کا درجہ حرارت انتہائی کم ہوجانے کے باعث یہاں سردی کی شدت میں اضافہ ہوا ہوگا جس کی وجہ سے یہاں آباد انسان دیگر خطوں کی جانب سے ہجرت کر گئے۔
اس تحقیق میں شامل سرکردہ سائنسدان جیسیکا ٹیئرنی کا کہنا ہے کہ موسم کے ماڈلز کو دیکھ کر اندازہ ہوتا ہے کہ بارشوں کی بجائے خشک سالی کی وجہ سے انسان یہاں سے ہجرت کر گیا ہوگا۔
اس بات پر اکثر سائنسدانوں کا اتفاق ہے کہ جدید انسان کی بنیاد افریقہ میں موجود ہے اور 55 سے 65 ہزار سال قبل انسانوں نے یہیں سے دیگر خطوں کی جانب ہجرت کی۔
امکانات ظاہر کیے گئے ہیں کہ انسانوں نے مشرقی افریقہ کے راستے سے ہوتے ہوئے عرب ممالک کا رخ کیا، تاہم اس بات پر حتمی اتفاق نہیں پایا جاتا۔
اس تحقیق سے قبل کے ماڈلز میں بتایا گیا تھا کہ صحارا کے ریگستان سمیت افریقہ کے مختلف علاقوں میں بارشیں زیادہ ہوتی تھیں۔
سن 1965 میں خلیج عدن سے حاصل کیے گئے سمندری مٹی کے نمونوں سے معلوم ہوا تھا اس میں زمین کے 2 لاکھ سال قبل کے ذرات بھی شامل تھے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں